فیس بک کے مالک مارک زکربرگ نے کمپنی کا نام تبدیل کردیا

فیس بک کے مالک

ڈیلی ٹائمز! فیس بک کے بانی مارکرزکر برگر نے کمپنی کا نام تبدیل کر دیا ہے ۔ انہوں نے فیس بک کا نام تبدیل کرنے کا اعلان سالانہ ڈیولپرز کانفرنس میں کیا۔انہوں نے اپنی کمپنی پیرنٹ کا نام ’META‘ رکھ دیا گیا ہے۔اس سے قبل پیرنٹ کمپنی کو بھی فیس بک ہی کہا جاتا تھا۔ اب فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ ’میٹا‘ کی چھتری تلے کام کریں گی،فیس بک کی ملکیت دیگر ایپلی کیشنز (فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ) کے نام تبدیل نہیں کیے جارہے۔

دوسری جانب فرانسس ہوگن کے انکشافات کے بعد فیس بک نے اپنی ساکھ کو پھر سے بہتر بنانے کے لیے ایسے نئے فیچرز متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے جن کا مقصد نوجوانوں کو ممکنہ نقصان سے تحفظ فراہم کرنا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق فیس بک کے گلوبل افیئرز کے نائب صدر نک کلیگ نے وعدہ کیا کہ انسٹاگرام میں ایک نیا فیچر ٹیک اے بریک متعارف کرایا جائے گا۔اس فیچر کا مقصد نوجوانوں میں کچھ وقت کے لیے سوشل نیٹ ورک کا استعمال روکنے کی حوصلہ افزائی کرنا ہے۔انہوں نے یہ تو نہیں بتایا کہ یہ فیچر کب تک دستیاب ہوگا مگر اس کا مقصد ایپ کی لت اور دیگر نقصان دہ رویوں سے تحفظ فراہم کرنا ہے۔فیس بک عہدیدار نے مزید بتایا کہ کمپنی کی جانب سے نوجوانوں کو سوشل میڈیا ایپس میں ایسے مواد سے دور رہنے سے آگاہ کیا جائے گا جو ان کی شخصیت کے لیے مضر ہوگا۔مگر اس حوالے سے تفصیلات نہیں بتائیں

مگر انہوں نے عندیہ دیا کہ فیس بک کے الگورتھمز کو ریگولیشن کی ضرورت ہے تاکہ حقیقی دنیا کے نتائج سے مطابقت کو یقینی بنایا جاسکے۔فرانسس ہوگن نے دعوی کیا تھا کہ فیس بک اس بات سے آگاہ ہے کہ اس کے الگورتھمز تباہ کن ہیں اور بچوں کو نقصان دہ مواد کی جانب لے جاتے ہیں اور نفرت انگیز مواد کا بہت معمولی حصہ ہٹایا جاتا ہے۔

Leave a Comment