ایک بزرگ کی نوجوان کو نصیحت

ایک بزرگ

ڈیلی ٹائمز! ایک بزرگ دریا کے کنارے دنیا سے قدرے ہٹ کر کٹیا میں رہتے تھے ان کے پاس ایک نوجوان گیا جو حق کا متلاشی تھا ۔ اس نے سوال کیا کہ:بابا جی بتائیے بھلا قرآن پاک پڑھنے سے دل کا زنگ کیسے اترتا ہے جبکہ ہمیں سمجھ بھی نہیں آتی؟ بابا جی بڑے گہرے استغراق میں گم تھے سنی ان سنی کر دی۔ نوجوان نے پھر سوال کیا جب تیسری مرتبہ اس نے یہی سوال کیا

تو بابا جی نے بیزار گی سے اسے جواب دیتے ہوئے کہا جاوہاں کونے میں بالٹی پڑی ہے اس میں سے کوئلے نکال کر رکھ دے اور قریب ہی دریا سے پانی بھر کر لا۔ نوجوان حد ادب کی وجہ سے اپنے سوال کے اس عجیب جواب پر جزبز ہوا مگر احترام حائل تھا لہٰذا خاموشی سے اٹھا اور بالٹی لے کر باہر دریا کی جانب روانہ ہوا کوئلوں کی وجہ سے بالٹی باہر سے چمکدار اور اندر سے بالکل سیاہ ہوچکی تھی ۔ جیسے ہی نوجوان نے دریا سے پانی لیا اور بالٹی اٹھا کر چلا تو یکایک اسے معلوم ہوا کہ بالٹی میں سوراخ ہیں جن سے پانی کٹیا تک پہنچتے پہنچتے سارا بہہ گیا۔وہ اندر داخل ہوا بابا جی نے سارا ماجرہ سنا اور کہا دوبارہ جا۔نوجوان سمجھ گیا کہ بابا جی کی بات میں ضرور کوئی حکمت ہے لہٰذا بالٹی اٹھائی اور پھر چل پڑا۔ دوبارہ پانی بھرا مگر پھر وہی ہوا کہ سارا پانی پہنچنے سے پہلے بہہ گیا بابا جی نے سنا لیکن پھر کمال لا پرواہی سے کہا

کہ : جا پھر لا۔نوجوان نے اس طرح کئی چکر کاٹے جب تھک گیا تو بابا جی کو کہنے لگا آپ نجانے کیوں میرے ساتھ یہ سلوک کر رہے ہیں جبکہ آپ دیکھ رہے ہیں کہ بالٹی میں کسی طرح سے پانی نہیں آسکتا ۔ اب بابا جی مسکرائے اور کہا: ذرا بالٹی کو اندر سے دیکھو کیا یہ ویسے ہی سیاہ ہے جیسے پہلے چکر میں تو نے اسے دیکھا تھا ۔ نوجوان نے بالٹی کو دیکھا اور کہا : نہیں اب تو یہ صاف ہوگئی اتنی بار پانی جو بھرا ہے اس میں۔بابا جی نے شفقت سے مسکراتے ہوئے کہا :پانی نہیں پہنچا لیکن اس کی صفت نے بالٹی کو سیاہ سے سفید کر دیا ہے۔یہی قرآن پاک کی صفت ہے پڑھتا جا پڑھتا جا پڑھتا جا اس کی صفات تیرے دل کو یوں ہی زنگ سے صاف کر کے اس دل میں موجود دنیا داری کے سوراخوں سے سارا زنگ بہا کر لے جائیں گی آخر میں دل صاف ستھر ا دنیا کی آلائشوں سے پاک ہو کر تجھے اللہ سے ہمیشہ ہمیشہ کے لئے جوڑ دے گا

۔بس یہی تھا تیرے سوال کا جواب۔اس سے ہمیں سبق ملتا ہے کہ دنیا میں کوئی بھی کام ہو اگر آپ محنت اور سچی لگن سے اس کام کو کرتے رہیں تو اللہ پاک منزل ضرور عطا کرتے ہیں ۔شکریہ

Leave a Comment