یااللہ خیر، خطرناک بیماری تیز رفتاری سے پھیلنے لگی۔۔۔پاکستان دنیاکادوسرابڑاملک بن گیا

خطرناک بیماری

پاکستان ٹائمز! ایک کروڑ 20 لاکھ سے زائد افراد ہیپاٹائٹس میں مبتلاجبکہ سالانہ دو لاکھ سے زائد افراد مرض کے ہاتھوں موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔ شوکت خانم ہسپتال میں تقریب ہوئی جس میں ہیپاٹائٹس کی تشخیص اور علاج کے حوالے سے بھی آگاہی دی گئی۔۔ قائم مقام سی ای او ڈاکٹر عاصم یوسف نے بتایا کہ ہیپاٹائٹس بی اور سی خاموش قاتل ہیں،

اکثر کیسز میں جب تک مرض کا پتہ چلتا ہے بہت دیر ہو چکی ہوتی ہے، مرض کی بروقت تشخیص اور احتیاط سے سو فیصدعلاج ممکن ہے۔ڈاکٹر عاصم کے مطابق پاکستان میں ہیپاٹائٹس کے مریضوں میں 84 فیصد بی اور سی ٹائپ میں مبتلا ہیں۔غیرمحفوظ انتقال خون، سرجیکل آلات اور آلودہ پانی مرض کے پھیلاؤ کی بڑی وجوہات ہیں۔ شوکت خانم ہسپتال ہیپاٹائٹس سے بچاؤ کیلئے اپنے عملے کی سکریننگ کرتا ہے اور ہیپاٹائٹس بی کی ویکسین بھی لگاتا ہے۔ ماہرین کے مطابق احتیاط اور بروقت علاج ہی ہیپاٹائٹس سے بچاؤ کا موثر حل ہے۔

Leave a Comment