آپ ٹانگوں کے درمیان ’’تکیہ“ رکھ کر سوتے ہیں؟ جانیے ایسا کرنا کیوں ضروری ہے

ٹانگوں

پاکستان ٹائمز !  سر کے نیچے تکیہ رکھ کر سونا تو عام سی بات ہے. لیکن کیا آپ ٹانگوں کے درمیان تکیہ رکھ کے سوتے ہیں؟ اگر نہیں تو جانئے ایسا کرنا کیوں ضروری ہے ۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ انسان کے بستر پر 2 تکئے تو لازمی موجود ہونے چاہئیں۔ ایک تکیہ سر کے نیچے اور ایک تکیہ دونوں گھٹنوں کے درمیان رکھنے کیلئے موجود ہونا چاہئے ۔ اس سے کیا فوائد حاصل ہوں گے۔ٹانگوں کے درمیان تکیہ رکھنے سے سب سے پہلا فائدہ یہ ہوتا ہے

کہ خون کی گردش بہتر رہتی ہے۔ تکیہ رکھنے سے خون کی رگوں اور نالیوں پر ایک پریشر سا بن جاتا ہے جس کی وجہ سے تمام اعضا تک خون کی گردش کا عمل تیزی سے ہوتا ہے ۔ جس سے وہ بہتر طریقے سے کام کرنے لگتے ہیں، جب اعضا اچھے انداز میں کام کرتے ہیں تو اس سے لوگوں کا مدافعتی نظام بھی مضبوط ہوتا ہے۔اکثر لوگوں کی رگیں پھول جاتی ہیں ، یا دوسرے لفظوں میں انہیں ہوتا ہے۔ ایسے لوگ رات کو سونے سے قبل اگر ٹانگوں کے درمیان تکیہ رکھ کر سونا شروع کردیں تو رگوں کے پھول جانے کی وجہ سے ہونے والے درد میں افاقہ ہوتا ہے اور درد میں کمی آجاتی ہے ۔ماہرین کا کہناہے کہ وہ لوگ جو زیادہ خراٹے لیتے ہیں ، انہیں ٹانگوں کے درمیان تکیہ رکھ کر سونا چاہئے ، کیونکہ سونے کے دوران ان کے کولہے اور کمر پر پریشر نہیں پڑتا اور ان کے سونے کی پوزیشن بہتر ہوجاتی ہے ۔ جس کی وجہ سے خراٹے لینے میں بھی کمی ہوتی دیکھی گئی ہے ۔اگر ٹانگوں کے درمیان تکیہ رکھ کر سویا جائے تو اس سے گھٹنوں پر دباؤ نہیں پڑتا ، جس کی وجہ سے صبح اٹھنے کے بعد آپ کو گھٹنوں میں درد بھی محسوس نہیں ہوتا ، اکثر لوگ صبح اٹھنے کے بعد گھٹنوں میں درد کی شکایت کرتے ہیں، اس کی ایک وجہ گھٹنوں پر دباؤ پڑنا ہوتا ہے، تاہم اگر گھٹنوں کے درمیان تکیہ رکھ کر سوئیں گے تو اس مسئلے سے چھٹکارہ مل جائے گا

پنجاب بھر کے تعلیمی اداروں میں گرمی کی چھٹیوں کا معاملہ لٹک گیا،جانیں

 پنجاب بھر کے تعلیمی اداروں میں گرمی کی چھٹیوں کا معاملہ لٹک گیا، این سی او سی کی جانب سے چھٹیاں 18 جولائی سے 1 یکم اگست تک دینے کی تجویز،صوبائی وزیر تعلیم بچوں کو 2 جولائی سے 2 اگست تک چھٹیاں دینے پر بضد، چھٹیاں دینے یا نہ دینے کا حتمی فیصلہ آئندہ این سی او سی کے اجلاس میں کیا جائے گا۔لاہورسمیت پنجاب بھر کے تعلیمی اداروں میں گرمی کی چھٹیوں کا معاملہ لٹک گیا ہے

۔ہر سال سکولوں میں گرمی کی چھٹیوں کا آغاز یکم جولائی سے کردیا جاتا ہے۔ذرائع کے مطابق این سی او سی کی جانب سے چھٹیاں 18 جولائی سے یکم اگست تک دینے کی تجویزدی گئی ہے جبکہ صوبائی وزیر تعلیم ڈاکٹر مراد راس بچوں کو 2 جولائی سے 2 اگست تک چھٹیاں دینے پر بضد ہیں۔حکومتی ذرائع کے مطابق گرمی کی چھٹیاں دینے یا نہ دینے کا حتمی فیصلہ آئندہ این سی او سی کے اجلاس میں ہوگا۔

۔

 

Leave a Comment