استغفراللہ اور یالطیف کا ورد کریں انشاء اللہ ہر کام جلد ہو جائے گا

استغفراللہ

پاکستان ٹائمز! نبی کریم ﷺ کا فرمان ہے۔ جمعہ کا دن تمام دنوں کاسردار ہے۔ اس کے علاوہ اللہ تعالیٰ نے اسی دن میں حضرت آدم ؑ کو پیدا کیا۔ اور اسی دن میں حضر ت آدم ؑ کو زمین پر اتار ا گیا۔اسی دن میں ان کی وفات ہوئی ۔ اسی دن میں ایک ساعت ایسی ہے کہ بندہ اس وقت جس چیز کا سوال کرے ۔ جو دعا کرے۔ وہ قبول ہوتی ہے۔ اللہ تعالیٰ اس کو عطا فرمائے گا۔

بشرطیکہ وہ ح رام کا سوال نہ کرے ۔ اسی دن میں قیامت قائم ہوگی۔ کوئی مقررفرشتہ اور آسمانوں وزمین اور ہواؤں وپہاڑ اور دریا ایسا نہیں کہ جمعہ کے دن سے ڈرتا نہ ہو۔ نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ ان دنوں میں سے بہترین دن جس میں سورج نکلتا ہے۔جمعہ کا دن ہے۔ اسی دن حضرت آدمؑ پیدا ہوئے اور اسی دن جنت میں داخل کیے گئے۔ اور اسی دن وہاں سے نکالے گئے ۔ اور قیامت بھی اسی جمعہ کے دن ہوگی۔ یہ جو عمل ہے ۔یہ وظیفہ آپ نے دن میں کسی بھی وقت کرلیناہے ۔ جب آپ کا وقت ہو۔ اس وظیفے کوکرنے کےلیے وقت کی کوئی قیدنہیں ہے۔ جب بھی آپ کو وقت ملے ۔ آپ اس کو پورے یکسوئی سے کرسکتے ہیں۔آپ نے دو رکعت نماز صلوۃ الحاجت کے پڑھنے ہیں۔ اس کے بعد ایک گلا س پانی بھر کر اپنے پاس رکھ لینا ہے۔ جب آپ نماز سے فارغ ہوجائیں تو اس

کے بعد سات مرتبہ درود ابراہیمی پڑھناہے۔ اور سات مرتبہ “سورت الفاتحہ ” پڑھنی ہے۔ اور “سورت الفاتحہ ” پڑھنے کے بعد ایک تسبیح آپ نے ” ایاک نعبد وایا ک نستعین ” کی پڑھنی ہے ۔ پھر آخر میں سات مرتبہ درود ابراہیمی پڑھناہے۔یہ عمل پورا ہوجائے ۔ آپ نے جو پانی کا بھرا ہوا گلا س رکھا تھا۔ اس پر پھونک مار دینی ہے۔ اسکے بعد آپ نے دعا کے لیے ہاتھ اٹھانے ہیں۔ اور دعا میں آپ نے مخصوص الفا ظ شامل کرلینے ہیں۔وہ الفاظ کیا ہے؟ اے اللہ ! اکیلی ذات آپ کی اچھی لگتی ہے۔ ہم تو اولاد والے اچھے لگتے ہیں۔ یا اللہ تعالی! آپ احد ہیں۔ ہمیں اولاد عطا فرما۔ یہ بھی اپنے سے دعا مانگنی ہے۔اس میں یہ حصے شامل کرلیناہے۔ اس کے علاوہ آپ نے اپنے دل سے جو بھی الفاظ ، جو بھی آہ نکلے وہ اللہ تعالیٰ سے اس دعا میں مانگنی ہے۔ اور گڑگڑا کر انتہائی عاجزی

سے آپ نے اللہ تعالیٰ سے دعامانگنی ہے۔جس گلاس پر آپ نے دم کیا تھا۔ وہ آپ نے خود بھی پیناہے۔ پھر اپنے شوہر کو بھی پلانا ہے۔ یہ وظیفہ آپ نے روزانہ باقاعدگی سے کرناہے۔ اس کے علاوہ چلتے پھرتے “استغفراللہ ” کی تسبیح اور اللہ تعالیٰ کا اسم مبارک ” یا لطیف ” کا ورد جار ی رکھا کریں۔ جب بھی یا د آئے تو آپ “استغفراللہ” اور “یالطیف” کو اپنی زبان پر جاری رکھا کریں۔ انشاءاللہ! آپ پر بہت جلد کرم ہوجائےگا۔

Leave a Comment